Archive

Archive for the ‘Random’ Category

Do Less..

April 23, 2013 Leave a comment

Do Less Thinking, and pay more attention to your heart.
Do Less Acquiring, and pay more attention to what you already have.
Do Less Complaining, and pay more attention to giving.
Do Less Controlling, and pay more attention to letting go.
Do Less Criticizing, and pay more attention to complementing.
Do Less Arguing, and pay more attention to forgiveness.
Do Less Running Around, and pay more attention to stillness.
Do Less Talking, and pay more attention to silence.

Advertisements

2011 in review

January 2, 2012 Leave a comment

The WordPress.com stats helper monkeys prepared a 2011 annual report for this blog.

Here’s an excerpt:

The concert hall at the Syndey Opera House holds 2,700 people. This blog was viewed about 28,000 times in 2011. If it were a concert at Sydney Opera House, it would take about 10 sold-out performances for that many people to see it.

Click here to see the complete report.

2010 in review (WordPress Official)

January 3, 2011 Leave a comment

The stats helper monkeys at WordPress.com mulled over how this blog did in 2010, and here’s a high level summary of its overall blog health:

Healthy blog!

The Blog-Health-o-Meter™ reads Wow.

Crunchy numbers

Featured image

The average container ship can carry about 4,500 containers. This blog was viewed about 22,000 times in 2010. If each view were a shipping container, your blog would have filled about 5 fully loaded ships.

 

In 2010, there were 13 new posts, growing the total archive of this blog to 209 posts. There were 67 pictures uploaded, taking up a total of 2mb. That’s about 1 pictures per week.

The busiest day of the year was November 9th with 175 views. The most popular post that day was Dr.Allama Muhammad Iqbal Quotes.

Where did they come from?

The top referring sites in 2010 were citehr.com, facebook.com, en.wordpress.com, blogcatalog.com, and mail.yahoo.com.

Some visitors came searching, mostly for courage, the road not taken, leadership quotes, allama iqbal quotes, and the road not taken by robert frost.

Attractions in 2010

These are the posts and pages that got the most views in 2010.

1

Dr.Allama Muhammad Iqbal Quotes August 2009
7 comments

2

The Road not Taken… June 2010
2 comments and 1 Like on WordPress.com,

3

Courage February 2009

4

 

The Serenity Prayer… November 2008

5

Did You Know…?(version 1) January 20094 comments

How to Help Pakistani Flood Victims…?

August 12, 2010 1 comment

Millions in Pakistan need clean water, sanitary food, housing and medical care. Organizations are now on the ground helping those displaced by the worst floods in 80 years.

In Pakistan, an estimated 15 million (number increasing every minute) victims of the worst floods in 80 years are searching for hope. Hundreds of thousands have lost their homes, drinking water is filthy and contaminated, and food is scarce.

One look at the devastating images of men and women walking through brown water up to their chests makes all of us feel grateful for our comfortable — and dry — homes.

Here’s how you can support their efforts.

1.Hillary Clinton announced Wednesday that Americans could text the word “SWAT” to the number 50555 to donate $10 per SMS message to the UN High Commissioner for Refugees to provide tents, clothing, food, clean water and medicine to Pakistan. You can watch a video of her statement here .

2.American Red Cross seeks to raise $100,000 to aid its Pakistan equivalent — Pakistan Red Crescent — with teams on the ground providing food, other relief items and medical care. To donate, go to their website.

3.UNICEF is providing help with water, sanitation, health and nutrition for displaced children and families. To donate, please click here.

4.Stamford, Conn.-based AmeriCares is sending medical and other aid to the hardest-hit areas of the flood. Readers can donate through the AmeriCares website.

5.CARE needs donations for its health teams, mobile clinics and distribution of food, which will help 100,000 flood victims. To donate, go to their website.

6.Doctors Without Borders/Medecins Sans Frontieres is providing water, sanitation help, hygiene kits, cooking utensils and other items to Pakistanis. Doctors Without Borders has also prepared itself to care for patients in case of cholera outbreaks. To donate to Doctors Without Borders, give to its emergency fund.

7.The International Rescue Committee , founded by Albert Einstein in 1933, is on the ground assessing the disaster, planning to make clean water accessible and to provide shelter to people who have lost their homes. To donate to the IRC’s efforts in Pakistan, click here.

8.The International Medical Corps (IMC) has sent mobile medical teams of doctors and paramedics to assist victims in the hardest hit areas of Khyber Pakhtunkhwa Province in the northwest. To make a donation to the Santa Monica, Calif. based organization, founded by a UCLA doctor, go to the IMC website. The organization is also seeking doctors, nurses and trained professionals from a wide variety of fields. For more information and to volunteer, visit the Corpswebsite.

9.Westport, Conn.-based Save the Children, dedicated to helping children worldwide, is already providing medical care, food and shelter kits. To donate to its Pakistan efforts,click here.

10. Mercy Corps’ Pakistan Emergency Fund supports Mercy Corps workers with their efforts in helping displaced families in the hard-hit Swat Valley. Visit the Mercy Corps website to donate to the Pakistan Emergency Fund.

11.Oxfam hopes to reach 400,000 people affected by the devastating floods, supplying clean water and preventing the spread of waterborne disease. To support Oxfam’s efforts, go to the Oxfam America website. Those outside the US can donate to its UK emergency relief fund for Pakistan.

12.The World Food Programme, the world’s largest humanitarian agency fighting hunger, is supplying food to the tens of thousands affected by the floods. To donate, visit the WFP website.

13.Islamic Relief Worldwide, a relief organization based in Birmingham, England, has launched a £2 million (or $3.2 million USD) appeal to deliver clean water, food and health care. You can donate here.

14. BRAC has temporarily halted its normal operations in Khyber-Pakhtunkhwa to provide relief work. Due to the acute food shortage, BRAC Pakisan has begun to deliver food packets containing such items at rice, lentils, flour and water purification tables. In the immediate future, the team will also be distributing Oral Rehydration Salts (ORS) and sending out a medical team to begin assessing health needs. To donate, click here.

Courtesy: Tonic Staff

First 365 days of my blog

October 21, 2009 4 comments

One year statistics of my Blog…(October 20 , 08 – October 20, 09) – with thanks to all the readers…!

blog stats

Statistics as of October 21, 2009

Monthly View (October 20, 08 - October 21, 09)

stats blog

Last 10 days - (10 - 21 Oct ,09 )

Away

September 14, 2009 Leave a comment

Dear Readers

I won’t be able to read your blogs or reply your comments, as I will be away for  about a fortnight or so…

Stay tuned..!

wishing you all.. a good time..

Regards

Asad

پاکستان ایک صدی بعد 2109 میں…کاشں ایسا ممکن ھو۔۔

September 9, 2009 7 comments

پاکستان ایک صدی بعد 2109 میں

امریکہ میں ای۔بی۔ایم کے دو ذہین افراد کے درمیان چیٹ ۔

جوزف : ہیلو مارک ۔ کل تم آفس نہیں آئے تھے ؟ خیریت؟
مارک: ہاں یار۔ میں پاکستانی ایمبیسی گیا تھا۔ ویزہ لینے۔

جوزف : اچھا واقعی ؟ پھر کیا ہوا ؟ میں نے سنا ہے آجکل انہوں نے بہت سختیاں کردی ہیں ۔
مارک : ہاں ۔ لیکن میں نے پھر بھی کسی نہ کسی طرح لے ہی لیا۔

جوزف: بہت اچھے یار۔ مبارک ہو۔ یہ بتاؤ کہ ویزہ پراسیس میں کتنا وقت لگا ؟ مارک : بس کچھ مت پوچھو یار۔ تقریباً مہینہ بھر لگ گیا۔ پہلی بار جب میں پاکستان ایمبیسی گیا تھا تو صبح 4:30 پر وہاں پہنچا۔ پھر بھی مجھ سےپہلے 10 لوگ کھڑے تھے۔ لمبی قطار۔ اور ہاں مجھ سے کچھ آگے بل گیٹ بھی اپنا پاسپورٹ اور بنک سٹیٹمنٹ ہاتھ میں لیا لائن میں کھڑا تھا۔

جوزف : اچھا۔ بل گیٹ کو ویزہ مل گیا ۔
مارک : نہیں۔ انہوں*نے خطرہ ظاہر کیا ہے کہ بل گیٹ پاکستان جانے کے بعد وہاں سلپ ہوجائے گا اور امریکہ واپس نہیں آئے گا۔

جوزف : یار ۔ پاکستانی ایمبیسی کو ایسا نہیں کرنا چاہیئے۔ اسلام آباد میں ہماری امریکن ایمبیسی تو پاکستانیوں کو ایک گھنٹے میں ویزہ دے دیتی ہے۔ پھر یہ کیوں*ایسا کرتے ہیں
مارک : ارے یار ۔ تمھیں تو پتہ ہے پاکستان اس وقت دنیا کی سپر پاور ہے۔ اسکا ویزہ لینا گویا مریخ کا ویزہ لینے کے برابر ہے۔ اور پھر قصور ہمارا امریکیوں کا بھی ہے۔ ہم بھی وہاں وزٹ ویزہ پر جاکر واپس نہیں آتے نا۔

جوزف : اچھا یہ بتاؤ ۔ تمھیں ویزہ کیسے مل گیا ؟
مارک : میں نے وہاں کی مشہور فرم ‘پھالیہ شوگر ملز لمٹیڈ’ سے بزنس وزٹ کا انویٹیشن منگوایا تھا۔ بس اسی بنیاد پر کام بن گیا۔

جوزف : ایک بار پھر مبارک ہو۔ یہ بتاؤ کب جا رہے ہو پاکستان ؟
مارک : جیسے ہی ٹکٹ ملا۔ دراصل میں نے دنیا کی مشہور ترین اور اعلی کلاس کی ائیر لائن میں* ٹکٹ کے لیے درخواست دی ہے۔ میرا بچپن سے خواب تھا کہ کسی دن پاکستان انٹرنیشنل ایر لائنز PIA میں سفر کر سکوں۔ اگر ٹکٹ مل گیا تو میرا دیرینہ خواب پورا ہوجائے گا۔

جوزف : پاکستان میں کتنا عرصہ رکو گے ؟
مارک : کتنا عرصہ ؟ کیا مطلب ؟ مجھے کسی پاگل کتے نے کاٹا ہے جو پاکستان چھوڑ کر واپس امریکہ آنے کی سوچوں گا۔ حقیقت یہ ہے کہ میں نے انٹرنیٹ پر چیٹ کے ذریعے پاکستان کے دوسرے بڑے شہر لاہور کے مضافات میں ایک صحت افزا مقام ‘کامونکی’ کی ایک لڑکی سیٹ کر لی ہے۔ میں اس سے شادی کرکے گرین پاسپورٹ اپلائی کردوں گا اور وہیں سیٹ ہوجاؤں گا۔

جوزف : یار تم بہت خوش قسمت ہو۔ لیکن تمھارے ماں باپ کا کیا ہوگا۔
مارک : پاکستانی گرین پاسپورٹ مل جانے کے بعد میں ماما-پاپا کو بھی وہیں بلا لوں گا۔

جوزف : کس شہر میں رہنا پسند کرو گے ؟
مارک : کامونکی والی لڑکی نے مجھے کہا ہے کہ پنجاب سٹیٹ صحت و صفائی کے اعلی معیار کی وجہ سے ویسے تو دنیا میں پہلے نمبر پر ہے۔ لیکن ہم کراچی سیٹل ہوں*گے۔ وہاں آپرچیونٹیز بہت ہیں۔ پتہ ہے نا ؟ کراچی اس وقت دنیا میں ٹریڈ اور ٹیکنالوجی کے لحاظ سے اول نمبر کا شہر ہے۔ اور وہاں کا 660 منزلہ حبیب بنک پلازہ دیکھنا بھی میری زندگی کی بہت بڑی خواہش ہے۔ سنا ہے اسکی اوپرکی 200 منزلیں بادلوں*میں ڈھکی رہتی ہیں۔ واؤؤؤؤؤؤؤؤؤؤو واٹ آ ڈریم یار۔

جوزف : اچھا یہ بتاؤ اپنے ساتھ کتنے ڈالرز لے کر جاؤ گے ؟
مارک : ڈالرز ؟ وہاں کون پوچھتا ہے۔ تمھیں پتہ ہے ایک پاک-روپے کے مقابلے میں آجکل 210 ڈالرز بنتے ہیں۔ یعنی میری اگر وہاں 10 ہزار پاکستانی بھی تنخواہ نکل آئی تو امریکہ میں چند مہینوں میں لاکھوں پتی بن جاؤں گا۔

جوزف : میں نے سنا ہے پاکستان کا لائف سٹینڈرڈ بہت اعلی ہے۔

مارک : ہاں۔ ایسے ہی ہے۔ وہاں پر

BMW لکژری کار 25 ہزار پاک روپے میں ، جبکہ مرسٹڈیز 32 ہزار میں مل ۔ لیکن مین تو سوزوکی یا چنگچی لوں گا۔ خالصتاً پاکستانی میڈ آٹوز ہیں۔ کچھ مہنگی ہیں لیکن بہت اعلی کلاس کی ہیں۔البتہ کراچی میں فلیٹ بہت مہنگے ہیں۔ اور کوئی بھی بلڈنگ 100 فلور سے کم تو ہے ہی نہیں۔ انسان ہر وقت خود کو فضاؤں میں اڑتا محسوس کرتا ہے۔

جوزف : اچھا یہ بتاؤ کہ وہاں کام کیا کرو گے۔
مارک : میں نے معلومات کی ہیں۔ وہاں پر آئی-ٹی میں بہت سکوپ ہے۔ لیکن تم تو جانتے ہو وہ ہمارے ملک کے تعلیمی معیار کو اپنے برابر نہیں سمجھتے اس لیے مجھے شروع میں وہاں کسی کسان کے ‘ گدھے’ وغیرہ نہلانے پڑیں گے۔ یا پھر ہوسکتا ہے کسی مشہور پارک کے دروازے پر ‘جوتے پالش ‘ کا کھوکھا ہی کھول لوں۔ کچھ نہ ہوا تو ٹیکسی کا لائسنس کرلوں گا۔ امریکہ سے تو پھر بھی کئی گنا بہتر کما لوں گا۔ اورہاں اگر میں وہاں کا گرین پاسپورٹ ہولڈر ہوگیا تو پھر ساری زندگی حکومت مجھے بےروزگاری الاؤنس اور میڈیکل سہولیات فری فراہم کرے گی۔ اور گرین پاسپورٹ کی بنا پر مجھے دنیا کے 80 فیصد ممالک میں بغیر ویزے کے وزٹ کرنے کی سہولت مل جائے گی۔

جوزف : بہت خوب ۔ یہ بتاؤ ۔ تمھیں انکی زبان کیسے آئے گی ؟
مارک : اوہ بھائی ۔ میں پچھلے 10 سال سے اردو لینگوئج سیکھ رہا ہوں۔ کالج میں آپشنل سبجیکٹ بھی اردو ہی لیا تھا۔ گریڈ میں پاس کیا ہے۔اور ہاں میں نے A

کیا ہے..  TOUFL Test Of Urdu as a Foreign Language

جوزف : تم بہت خوش قسمت ہو یار۔ کاش میں تمھاری جگہ ہوتا۔سنا ہے وہاں پر ٹرین سسٹم بہت اچھا ہے۔
مارک : ہاں ۔ کراچی سے لاہور اور وہاں سے پشاور اور کوئٹہ کے لیے دنیا کی تیز ترین اور آرام دہ ترین ٹرین ‘تیز گام’ چلتی ہے۔ اس میں سفر کا بھی اپنا ہی مزہ ہے۔ اور لاہور میں ہی دنیا کا مشہور فلم سٹوڈیو لالی وڈ بھی ہے۔ جہاں پر میں دنیا کے عظیم اداکاروں سلطان راہی ، شفقت چیمہ اور ریما کے مجسمے دیکھوں گا۔ سنا ہے آجکل انکے بچے بھی فلم انڈسٹری میں ہیں۔اور راولپنڈی میں دنیا کی سب سے بڑی اور گہری جھیل ‘راول ڈیم’ بھی ہے۔ اس میں بوٹنگ کرنا بھی مجھے ہمیشہ سے ہی خواب لگتا ہے۔ لیکن اب یہ خواب بھی حقیقت بن جائے گا۔

جوزف : سنا ہے ہمارا صدر اگلے مہینہ امداد لینے پاکستان بھی جائے گا ؟
مارک : ہاں۔ ایسا ہی ہے۔ اور قرضے بھی ری-شیڈول کروانے ہیں۔ پچھلے دنوں پاکستان کے محکمہ نسواریات کا منسٹر پختون خان ، وہائٹ ہاؤس آیا تھا تو 10 لاکھ روپے کا ڈونیشن تو صرف یہاں چلنے والے ایک منشیات کے ادارے کو دے گیا تھا۔ تاکہ ہماری نوجوان نسل کو زیادہ سے زیادہ منشیات باآسانی مہیا ہوسکیں۔

جوزف : اچھا تمھیں یاد ہے ہمارا پرائمری سکول کا کلاس فیلو ‘پیٹر’ ۔ وہ بھی تو کہیں پاکستان میں سیٹ ہے۔
مارک : ہاں۔ وہ کوئٹہ کے قریب ایک وادی ‘ پوستان’ میں سیٹ ہے۔ سنا ہے پوسٹ کے کھیت سے پوست اکٹھی کرنے کا کام ہے اسکا۔ ایک ہی سیزن میں اتنا کما لیتا ہے کہ باقی 6 ماہ بیٹھ کر کھاتا رہتا ہے۔ عیش ہے اسکی تو۔

جوزف : یار میں بھی پاکستانی ویزہ کے لیے اپلائی کرنا چاہتا ہوں۔ مجھے کچھ انسٹرکشن تو دو ؟
مارک : پاکستانی ایمبیسی میں ہمیشہ شلوار قمیض پہن کر جانا۔ وہ لوگ اپنے قومی لباس کو بہت اہمیت دیتے ہیں۔ اور کوشش کرنا کہ ویزہ کی درخواست انگریزی کی بجائے اردو میں پُر کرنا۔ اس سے بھی اچھا تاثر ملے گا۔اور ایمبیسی میں داخل ہوتے ہی ‘السلام علیکم ۔ جناب کیا حال ہے ؟’ کہنا مت بھولنا۔اس سے پتہ چلے گا کہ آپ کتنے مہذب ہو۔

جوزف : تھینک یو یار۔
مارک : تھینک یو نہیں شکریہ ۔ اب میں پاکستانی ویزہ ہولڈر ہوں۔ مجھے شکریہ کہنے میں فخر ہے ۔ خدا حافظ

TOUFL
%d bloggers like this: